جمعہ، 24 اپریل، 2020

قرآنی عربی سیکھنے کا آسان طریقہ


ان لوگوں کے لیے جو قرآنی عربی سیکھنے کا آسان طریقہ چاہتے ہیں!

اور یقیناً آپ کو یہ خواہش رکھنی ہی چاہیے، کیونکہ قرآن کے تراجم اس کے عربی متن کی خوبصورتی اور اثر پذیری کو بیان نہیں کر سکتے۔

یہ مسلمانوں کے لیے سب سے اہم کتاب ہے، اور ایک طرح سے اس کی زبان سیکھنا آپ کو بلاشبہ اللہ سبحانہ و تقدس کے قریب، انتہائی قریب کر دے گی۔ کیا ہی لطف ہو کہ آپ قرآن کی زبان  براہِ راست سمجھنے لگ جائیں۔

حضرت عثمان (بن عفان) رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضورنبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : تم میں سے بہتر شخص وہ ہے جو (خود) قرآن حکیم سیکھے اور (دوسروں کو بھی) سکھائے۔  (بخاری)

حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے  اپنی خلافت کے زمانے میں حضرت ابو موسیٰ اشعری رضی اللہ عنہ  اور ان کی گورنری کے زیرِ سایہ لوگوں کو لکھا: ”علم حاصل کرو اور سنتوں کا فہم(فقہ)، اور علم حاصل کرو اور عربی کی سمجھ۔“ (ابن ابی شیبہ، المصنف، ج:6، ص:126)

روایت ہے کہ انہوں نے کہا، ”عربی سیکھو، کیونکہ یہ ذہانت کو بڑھاتی ہے اور نیکیوں پر ابھارتی ہے۔“ (البیہقی، شعب الایمان ج:4، ص:187)

روایت ہے کہ ابی ابن کعب رضی اللہ عنہ نے فرمایا، ”عربی سیکھو، ایسے ہی جیسے تم قرآن کو یاد کرنا سیکھتے ہو۔“ (ابن ابی شیبہ، المصنف، ج:7، ص:150)

میں اس ویب سائٹ کی پرزورسفارش کروں گا، ایک مرتبہ آپ ضرور اس پر جا کر دیکھیں۔ اس میں مختصر 30 منٹ کی ویڈیوز ہیں  جن کے ذریعے آپ  قرآنی عربی اور قرآنی  قواعد (گرائمر ) سیکھ جائیں گے۔

ویب سائٹ پر آپ عربی ”تلاوت“ تجوید کے ساتھ (لفظ بہ لفظ) سکھانے کا بھی انتظام ہے۔ میری ذاتی دلچسپی قرآنی عربی سیکھنے میں ہے، چونکہ میں عربی پڑھنا پہلے سے جانتا ہوں۔ پھر بھی اس بات کا ذکر کر دیا کہ شاید کسی کو اس کی بھی ضرورت ہو تو وہ استفادہ کر سکے۔
https://understandquran.com
ویب سائٹ کے علاوہ اس کی ایپ بھی موجود ہے۔ 
ایپل ایپ اسٹورکا لنک
https://itunes.apple.com/us/app/learn-quran/id584350014?mt=8&uo=4
اینڈروئیڈ  ایپ، گوگل پلے اسٹور کا لنک
https://play.google.com/store/apps/details?id=com.uqa.learnquran
ویسے میں ایپ کے مقابلے میں ویب سائٹ کو ذرا ترجیح دوں گا کیونکہ اس میں تمام آپشنز  اور ریسورسز موجود ہیں۔

میں اس ویب سائٹ کی سفارش اس لیے کر رہا ہوں کیونکہ یہ قرآن کی عربی معانی کے ساتھ سیکھنے کی بہترین تکنیکوں میں سے ایک ہے۔ کچھ وجوہات:
یہ آپ کو فقط الفاظ سکھاتی ہے
اس کی وجہ سے سیکھنے کی رفتار بے حد تیز ہو جاتی ہے، کیونکہ 125 الفاظ قرآن میں 40000 مرتبہ آئے ہیں (قرآن میں کل الفاظ تقریبا 78000 ہیں۔)۔ یعنی قرآن کے تقریباً 50 فی صد الفاظ آپ ایک ہی مرتبہ میں سیکھ جاتے ہیں۔
اس میں سکھاتے وقت استعمال کی گئی مثالیں ان سورتوں کی ہیں جو ہم سب کو الحمد للہ یاد ہی ہوا کرتی ہیں، مثلاً سورہ فاتحہ، سورہ فیل اور دیگر مختصر سورتیں۔
چونکہ آپ ان الفاظ کو پہلے سے جانتے ہیں، اس لیے ان کے مطالب سمجھنے میں آسانی ہوگی اور پھر نمازوں میں بار بار دہرائے جانے پر مشق بھی خود بخود ہوتی جائے گی۔
یہ  اتنے اعلیٰ معیار کی ریسورس ہونے کے باوجود بالکل مفت ہے۔ بطور مسلمان ہمیں اس کا شکر کرتے ہوئے بلاتردد فائدہ اٹھانا چاہیے۔ میرے خیال کے مطابق ان کی کوششیں اور ارادے بالکل نیک اور دنیاوی اغراض سے پاک ہیں۔

مذکورہ مواد انگریزی اور اردو، ہر دو زبان میں موجود ہے۔ چنانچہ آپ اپنی سہولت کے مطابق زبان پسند کر سکتے ہیں۔

نوٹ (از شکیبؔ)

فقیر نے خود بھی اس ماڈل کی کلاسز   میں آف لائن شرکت کی ہےاور میرے خیال میں یہ واقعی ایک اعلیٰ کورس ہے۔  حالانکہ اس وقت بھی عربی سے شناسائی تھی، لیکن اس تکنیک کا فائدہ یقینا نظر آیا تھا۔ 
ایک تو یہ طلباء کے ذہن سے گرامر کا بوجھ ہٹا دیتا ہے۔
دوسرے کون سا لفظ قرآن میں کس قدر استعمال ہوا ہے، یہ سن کر اسٹوڈنٹ کی حوصلہ افزائی ہوتی رہتی ہے۔
تیسرے، جیسا کہ اوپر گزر چکا، یہ کسی مکتبِ فکر کا حامی نہیں بلکہ تشریحات کو ایک طرف رکھ کر  صرف اور صرف الفاظ پر توجہ مرکوز رکھتا ہے۔ 

٭٭٭

آخری نوٹ کو چھوڑ کر، یہ پوسٹ ریڈٹ پر ایک گمنام برادر کی انگریزی پوسٹ کا ترجمہ ہے۔
shakeeb author pic
شکیبؔ احمد از کامٹی، الہند

نام شکیب احمد، وسط ہند سے تعلق ہے... شاعر، ادیب، لیکچرر، اور سافٹویئر انجینئر (وغیرہ) ہوں۔ زندگی میں بس ایک ہی خواہش ہے کہ کچھ ڈھنگ کا کام کر سکوں جو اللہ کے سامنے پیش کرنے لائق ہو۔ باقی آپ جو پوچھنا چاہیں...
مزید پڑھیں ←

جمعہ، 17 اپریل، 2020

حریمِ ناز میں ہر دلعزیز ہے کوئی - غزل


To read in English (Roman) and Hindi (Devanagari), click here.


حریمِ ناز میں ہر دلعزیز ہے کوئی
زیادِ رشک سے پھر اشک ریز ہے کوئی
عبث ہی روتے ہیں احباب میرے مرنے پر
وصالِ یار بھی رونے کی چیز ہے کوئی
لباسِ فاخرہ پہنے یہ خوش نما دنیا
برائے اہلِ تصوف کنیز ہے کوئی
ترے جمال کی تابانیوں سے روشن ہو
ہمارے دل پہ جو پردہ دبیز ہے کوئی
دوانہ وار پکارے ہے جو تجھے شب و روز
شکیبؔ نام کا اک بد تمیز ہے کوئی

الفاظ و معانی

1۔ حریمِ ناز: محبوب کا گھر، دوست کی قیام گاہ، شبستان محبوب۔
2۔ زیادِ رشک: رشک کی زیادتی
3۔ اشک ریز: آنسو بہانے والا،اشک بار،اشک فشاں،آبدیدہ
فارسی الاصل ترکیب۔ ”ریز“ اردو میں یائے مجہول کے ساتھ زیادہ مستعمل ہے لیکن اصل فارسی تلفظ یائے معروف کے ساتھ ہے۔ (حوالہ ۱، ۲، ۳)
4۔ عبث: بے فائدہ، بلا وجہ، بے کار
5۔ دبیز: موٹی  (thick)
shakeeb author pic
شکیبؔ احمد از کامٹی، الہند

نام شکیب احمد، وسط ہند سے تعلق ہے... شاعر، ادیب، لیکچرر، اور سافٹویئر انجینئر (وغیرہ) ہوں۔ زندگی میں بس ایک ہی خواہش ہے کہ کچھ ڈھنگ کا کام کر سکوں جو اللہ کے سامنے پیش کرنے لائق ہو۔ باقی آپ جو پوچھنا چاہیں...
مزید پڑھیں ←